27

وزیراعظم کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس

اسلام آباد: وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس جاری ہے۔
وزیراعظم ہاؤس میں ہونے والے اجلاس میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کمیٹی سمیت تینوں مسلح افواج کے سربراہان، ڈی جی آئی ایس آئی اور اہم وفاقی وزرا شریک ہیں۔
ذرائع کے مطابق اجلاس میں ملکی سلامتی و سرحدی سیکیورٹی سمیت خطے کی صورتحال پر غور ہوگا جب کہ ملک میں حالیہ دہشت گرد ی کے واقعات پر بھی غور کیا جائے گا۔
ذرائع کا کہنا ہےکہ اجلاس میں بھارت کی مسلسل سرحدی خلاف ورزیوں، خطے کی مجموعی سلامتی کی صورت حال پر بھی غور کیا جائے گا۔
اس کے علاوہ دہشت گردی کے خلاف جاری کارروائیوں، آپریشن ردالفساد کے نتائج اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت کے خلاف پاکستان کے سفارتی اقدامات کا بھی جائزہ لیا جائے گا۔
قومی سلامتی کمیٹی کا اس ہفتے میں بلایا جانے والا دوسرا اجلاس ہے، اس سے قبل 14 مئی کو پاک فوج کی تجویز پر سابق وزیراعظم نواز شریف کے ممبئی حملوں سے متعلق ایک متنازع بیان کے معاملے پر قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس طلب کیا گیا تھا۔
وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت 2 گھنٹے جاری رہنے والے اجلاس کے بعد قومی سلامتی کمیٹی نے ممبئی حملوں سے متعلق سابق وزیراعظم نواز شریف کے متنازع بیان کو مکمل طور پر غلط اور گمراہ کن قرار دیتے ہوئے تمام الزامات کو متفقہ طور پر مسترد کردیا تھا۔
تاہم نواز شریف نے قومی سلامتی کمیٹی کے ہنگامی اجلاس کے بعد جاری کیے گئے اعلامیے کو ‘غلط’ قرار دے کر مسترد کردیا تھا۔
واضح رہے کہ حال ہی میں بھارتی میڈیا کی جانب سے سابق وزیراعظم نواز شریف کے ایک پاکستانی انگریزی اخبار کو دیئے گئے انٹرویو کو اچھالا گیا، جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ‘کیا یہ اجازت دینی چاہیے کہ غیر ریاستی عناصر ممبئی جا کر 150 افراد کو ہلاک کردیں، بتایا جائے ہم ممبئی حملہ کیس کا ٹرائل مکمل کیوں نہیں کرسکے’؟

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں