101

یوٹیوب نے جرائم کی حوصلہ افزائی کرنے والی میوزک ویڈیوز ہٹادیں

لندن: یوٹیوب نے سینئر پولیس اہلکار کی نشاندہی پر 30 سے زائد پُرتشدد میوزک ویڈیوز سائٹ سے حذف کردیں۔

بین الاقوامی نشریاتی ادارے کے مطابق ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ یوٹیوب نے میٹرو پولیٹن پولیس کمشنر کریسڈا ڈک کی نشاندہی پر 30 سے زائد ویڈیو کلپس کو اپنی ویب سائٹ سے ہٹا دیا ہے۔ پولیس افسر کا دعویٰ تھا کہ یوٹیوب پر موجود کچھ میوزک ویڈیوز لندن میں قتل اور پُرتشدد جرائم کو فروغ کا باعث بن رہی ہیں اس لیے انہیں حذف کردینا چاہیے۔

یوٹیوب انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ایک سینئر پولیس اہلکار نے 60 سے زائد میوزک ویڈیوز پر تشدد کو ابھارنے کے اعتراضات اٹھائے ہیں جس پر انتظامیہ نے اب تک 30 سے زیادہ ویڈیوز کو ڈیلیٹ کردیا ہے جب کے مزید ویڈیوز کو بھی مرحلہ وار ویب سائٹ سے ہٹا دیا جائے گا، یوٹیوب لوگوں کو مثبت تفریح فراہم کرنے کی اپنی ترجیحات پر قائم ہے۔
ناقدین کا کہنا ہے کہ یوٹیوب میں چند میوزک ویڈیوز نوجوانوں کو منشیات اور جرائم کی جانب راغب کرتی ہیں جب کہ ان ویڈیوز میں تشدد کے طریقے بھی دکھائے جاتے ہیں جس سے نوجوانوں کے ذہنوں پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں جس سے سماج میں جرائم کی شرح میں اضافے کا خدشہ رہتا ہے۔

یاد رہے کہ میٹرو پولیٹن پولیس کمشنر کریسڈا ڈک نے یوٹیوب پر موجود چند ویڈیوز بالخصوص ’ڈرل میوزک‘ پر نوجوانوں کو تشدد پر اکسانے کا الزام عائد کرتے ہوئے ان ویڈیوز کو ہٹانے کا مطالبہ کیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں