226

سابق کرپٹ ڈی جی سپورٹس بورڈ کے خلاف جنسی ہراساں کئے جانے کا انکشاف

سابق کرپٹ ڈی جی سپورٹس بورڈ کے خلاف جنسی ہراساں کئے جانے کا انکشاف

متاثرہ قومی و بین القامی خواتین کھلاڑی اور کوچز عید کے بعد میڈیا کو جنسی ہراساں کرنے کے تمام ثبوت کے ساتھ سابق ڈی جی کے کرتوت فراہم کرینگی

ایک سابق ڈی ڈی جی اختر نوازجو چار ماہ سے ادارے سے فراغت کے باوجود سرکاری مکان اور سرکاری سٹاف کے ساتھ سرکاری سامان پر ابھی تک قابض

اسلام آباد قومی خواتین اتھلیٹس اورکوچزکا سابق ڈی جی سپورٹس بورڈ کے خلاف جنسی ہراساں کرنے کے حوالے سے اکٹھ عید کے بعد پریس کانفرنس میں جنسی ہراساں کیے جانے کے حوالے سے تمام ثبوت میڈیا کے سامنے لانے کا انکشاف جبکہ ایک سابق ڈی جی پاکستان سپورٹس بورڈ اور قومی احتساب بیورو (نیب )کو اربوں کی کرپشن میں مطلوب اختر نواز گنجیرہ سرکاری گھر کے ساتھ سرکاری اہلکاروں اور سرکاری سامان پر قابض، لیاقت جمنازیم کی تحقیقات پر بھی اثر انداز، سرگودھا کے نئے ڈی جی کا بھی نام استعمال کرنے کا انکشاف، انتہائی با خبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ نیب کو اربوں کی کرپشن میں مطلوب اختر نواز کو سرکاری نوکری سے فارغ ہوئے چار ماہ سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے لیکن کرپٹ سابق اہلکار ابھی تک سرکاری رہائش کے ساتھ ساتھ سرکاری سٹاف اور سرکاری دفتری سامان پر بھی قبضہ کئے ہوئے جس سے پی ایس بی میں مختلف چہ مگوئیاں بھی جنم لے رہی ہیں ، سابق کرپٹ ڈی جی پی ایس بی جسے کرپش کے الزامات پر پچھلے سال معطل کیا گیا تھا تو بھی موصوف نے سرکاری ملازمین پر رعب رکھا کہ وہ جلد اپنے عہدے پر بحال ہو جائینگے پھر بعدازاں حکومت کو سیاسی مجبوری کے باعث سابق وزیر ریاض پیرزادہ کے سامنے مجبوری کے طور پر غیر قانونی طور پر اسے بحال کرنا پڑا لیکن اب سرکاری نوکری سے فراغت کے بعد بھی موصوف پی ایس بی حکام کو یہ باور کروانے کی کوشش کر رہے ہیں کہ وہ جلد دوبارہ اسی عہدے پر بحال ہو ررہے ہیں موصوف یہ سب کچھ اس لئے کر رہے ہیں کہ وہ کرپشن کی انکوائیروں میں کوئی ثبوت نہ دے سکیں ،یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ موصوف کے زیر استعمال لیب ٹاب سمیت سرکاری سامان بھی ابھی تک کئی خطوط لکھنے کے باوجود بھی واپس نہیںکیا گیا جبکہ نایب قاصد مصطفی سمیت کئی سرکاری ملازمین ابھی تک کرپٹ ڈی جی کے ہاں ہی کام کر رہے ہیں ، ادھر باخبر ذرائع سے معلوم ہوا ہے کہ کئی خواتین کھلاڑی اور کوچز سابق ڈی جی جس نے انہیں جنسی طور پر ہراساں کیا اور انکی مجبوریوں سے ناجائز فائدہ بھی اٹھاتے رہے نے عید کے بعد موصوف کے خلاف پریس کانفرنس کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس میں وہ میڈیا کو وہ تمام ثبوت بھی فراہم کرینگے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں