46

وفاقی دارالحکومت کے پولنگ اسٹیشنز پر”ہاتھا پائی اورڈنڈا برسائی” کا خطرہ

وفاقی دارالحکومت کے پولنگ اسٹیشنز پر”ہاتھا پائی اورڈنڈا برسائی” کا خطرہ
برادری ازم ، جیالہ پن ، جنون اور (ن) کے درمیان (آج) وفاقی دارالحکومت میں 700پولنگ اسٹیشنز پر ہاتھا پائی ، ڈنڈا برسائی ودیگر خطرات سروں پر منڈلانے لگے ہیں۔وفاقی پولیس نے سکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کرتے ہوئے مذکورہ پولنگ اسٹیشنز پر نظریں گاڑھ لیں۔معلومات کے مطابق وفاقی دارالحکومت کی پولیس نے750 کے قریب پولنگ اسٹیشنز میں سے 53 پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دے دیا ہے جہاں پر چوہدری ،ملک، نمبر دار ودیگر برادریوں کی رنجش سے حالات کشیدہ ہوسکتے ہیں اور حساس قرار دیئے گئے پولنگ اسٹیشنز پر حالات کشیدہ ہونے پر انسانی جانوں کے ضیاع کے خدشات ہیں جبکہ بعض پولنگ اسٹیشن میں کم تعلیم یافتہ لوگ ہیں جن کی وجہ سے لڑائی جھگڑا اور دنگا فساد ہو سکتا ہے۔بتایا گیا ہے کہ تھانہ کورال کے علاقے میں 18 ،تھانہ نیلور کی حدود میں تین ، تھانہ آئی نائن کی حدود میں چار ،تھانہ شہزاد ٹاؤن میں دو ، تھانہ سہالہ کے علاقے میں دو ،تھانہ بنی گالہ کی حدود میں دو ،بھارہ کہو میں تین اور تھانہ آبپارہ میں 11 جبکہ تھانہ کو ہسار کی حدود میں دو پولنگ اسٹیشنزحساس ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں