46

کوک اسٹوڈیو 11: کیا علامہ اقبال کی ‘شکوہ، جواب شکوہ’ کے ساتھ انصاف کیا گیا؟

کوک اسٹوڈیو ایکسپلورر کے بعد کوک اسٹوڈیو سیزن 11 نے سب کی دلچسپی اپنی جانب مبذول کروا رکھی ہے، جس کی پہلی قسط کے چار گانے بھی ریلیز ہوچکے ہیں۔

کوک اسٹوڈیو 11 کی پہلی قسط میں سب سے پہلے شاعر مشرق علامہ محمد اقبال کی مشہور زمانہ نظموں ‘شکوہ’ اور ‘جواب شکوہ’ پر مشتمل گانا نئی اور روایتی موسیقی کے ساتھ پیش کیا گیا۔

یہ گانا 10 اگست کو ریلیز کیا گیا، جو 13 منٹ 13 سیکنڈ پر مشتمل ہے۔

اس گانے کے دو حصے ہیں، ‘شکوہ’ والا پہلا حصہ گلوکارہ نتاشہ بیگ نے اپنے ساتھیوں کے ساتھ موسیقی کے جدید انداز سے گایا جبکہ دوسرے حصے ‘جواب شکوہ’ کو قوال ابو محمد اور فرید ایاز نے قوالی کے انداز میں پیش کیا۔

گانے کے ریلیز ہوتے ہی کئی پرستاروں نے اس پر پسندیدگی کا اظہار کیا۔

جہاں کئی لوگوں نے اس گانے کو پسندیدگی کی سند فراہم کی، وہیں کچھ لوگوں کو یہ متاثر کرنے میں ناکام رہا اور انہوں نے اسے علامہ اقبال کی نظموں کے ساتھ ناانصافی قرار دیا۔

ایک ٹوئٹر صارف نے لکھا، ‘یہ گانا بہت برا ہے، اس کے لیے غلط گلوکاروں کا انتخاب کیا گیا جس میں راگ، جوش اور اقبال کی شاعری میں پائی جانے والے غصے کی کمی ہے’۔

ایک اور صارف نے گزارش کی کہ ’جب شکوہ جواب شکوہ جیسے کلام کا انتخاب کیا جائے تو اس کے جوہر کو سمجھنے کی بھی کوشش کی جائے، اس گانے نے تو علامہ اقبال کی خوبصورت نظم کا بے رحمی سے جنازہ نکال دیا ہے‘۔

اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے شاعری میں ردوبدل کیے جانے کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔

ایسے ہی ایک صارف نے مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا، ’مزہ نہیں آیا‘۔

تمام تر تنقید کے باوجود سیزن 11 کی پہلی قسط کے اس گانے کو اب تک لاکھوں افراد دیکھ چکے ہیں اور اس وقت یہ یوٹیوب پر نمبر ون ٹرینڈ کے ساتھ سب سے مقبول ہے۔

سیزن 11 کی پہلی قسط میں پیش کیے گئے دیگر گانے

‘شکوہ جواب شکوہ’ کے بعد اس قسط میں ’بالکڑہ‘، ’میں ارادہ‘ اور ’ریپ ہے سارا‘ بھی شاندار موسیقی کے ساتھ پیش کیے گئے۔

یہ تمام گانے نوجوان گلوکاروں کے ساتھ مشہور قوال اور فنکاروں نے گائے ہیں، جن میں کوک اسٹوڈیو ایکسپلورر کے گلوکاروں کی آواز بھی شامل کی گئی ہے۔

بالکڑہ:

کوک اسٹوڈیو سیزن 11 کے دوسرے گانے کی خاص بات یہ ہے کہ پہلی مرتبہ خواجہ سراؤں کو بھی اس گانے کے ذریعے ایک بڑے پلیٹ فارم پر جگہ دی گئی ہے۔

یہ گانا خواجہ سرا لکی اور نغمہ کے ساتھ گلوکار جمی خان نے گایا ہے، یہ ایک ڈھولک گانا ہے، جس میں فوک اور ٹپا اسٹائل کی موسیقی شامل کی گئی ہے۔

ریپ ہے سارا:

تیسرا گانا ’ریپ ہے سارا ‘ مقبول ہپ ہاپ اور ریپ اسٹائل ہے، جس میں انگریزی، اردو، پنجابی اور بلوچی زبان کا خوبصورت امتراج پیش کیا گیا ہے۔

یہ گانا مشہور بینڈز ‘لیاری انڈر گراؤنڈ’ اور ‘ینگ دیسی’ نے مشترکہ طور پر گایا ہے۔

میں ارادہ:

’میں ارادہ‘ کوک اسٹوڈیو سیزن 11 کا چوتھا گانا ہے، جس میں ہانیہ عامر نے اپنی آواز شامل کی ہے۔

اس گانے میں ہانیہ عامر کے ساتھ رچل وکاس نے بھی گلوکاری کے جوہر دکھائے ہیں، ساتھ ہی کوک اسٹوڈیو ایکسپلورر کی آریانا اور آمرینا سمیت شمو بائی کی خوبصورت آواز بھی شامل کی گئی ہے۔

اس گانے کو خواتین کا نغمہ قرار دیا گیا ہے کیونکہ اس میں خواتین کی ہمت، بلند حوصلوں اور عزم کو واضح کیا گیا ہے۔

ایک طرف جہاں مداحوں کی جانب سے ان تمام گانوں پر پسندیدگی کا اظہار کیا جا رہا ہے، وہیں کچھ کی جانب سے تنقید بھی کی گئی ہے کہ اقبال کی شاعری کو گانے کی صورت میں پیش کرکے مزہ خراب کردیا گیا۔

دوسری جانب اس حوالے سے بھی تنقید کی جارہی ہے کہ خواجہ سراؤں کو وہی روایتی ڈھولک گانا کیوں دیا گیا، ان سے کچھ نیا کروانا چاہیے تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں