14

اپوزیشن صدر کیلئے متفقہ امیدوار لانے میں تاحال ناکام

اسلام آباد: حزب اختلاف صدر مملکت کے عہدے کے لیے متفقہ امیدوار لانے میں ابھی تک ناکام ہے۔

پیپلزپارٹی کے وفد کی جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے آج ملاقات ہوئی۔

ملاقات کے بعد راجہ پرویز اشرف اور مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگو کی۔

راجہ پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ دونوں اطراف سے مثبت حل کی کوشش جاری ہے، امید ہے دو راتوں میں کوئی حل نکل آئے گا۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آصف زرداری سے عزت و احترام کا رشتہ ہے، یہ ایک مرحلہ ہے جسے پوری قوم اور سیاست دانوں نے عبور کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک نقطہ ہے کہ امیدوار ایک کیسے ہو اسے طے کرنا ہے، ایک رات باقی ہے مسئلہ کا حل نکال لیں گے۔

عارف علوی، اعتزاز احسن اور فضل الرحمان کے صدارتی انتخاب کیلئے کاغذات جمع

گزشتہ روز جے یو آئی (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے آصف زرداری سے ملاقات کی جس میں انہوں نے صدارتی الیکشن کے لیے اعتزاز احسن کو دستبردار کرنے اوراپوزیشن کا مشترکہ امیدوار لانے کی درخواست کی تھی جس پر سابق صدر نے کوئی حتمی جواب نہیں دیا تھا۔

اس سے قبل اسلام آباد میں آصف زرداری کی زیرصدارت پیپلز پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں صدارتی امیدوار کے لیے مولانا فضل الرحمان کی حمایت کے مضمرات اور سیاسی فوائد کا تقابلی جائزہ لیا گیا

اجلاس میں صدارتی انتخاب کے بعد اپوزیشن اتحاد کے مستقبل پر بھی غور کیا گیا۔

بلاول بھی صدارتی امیدوار کیلئے اعتزاز احسن کے نام پر ڈٹ گئے

ذرائع کا کہنا ہےکہ اجلاس میں شرکا کو صدارتی امیدوار پر چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کی رائے سے بھی آگاہ کرتے ہوئے بتایا گیا کہ پارٹی چیئرمین نے اعتزاز احسن کو اپنا حتمی امیدوار قرار دیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں شریک پارٹی رہنماؤں نے اعتزاز احسن کا نام واپس لینے کے آپشن کی مخالفت کردی ہے، پارٹی رہنماؤں نے رائے دی کہ پیپلز پارٹی کا اپنا منشور اور اپنی سیاست ہے، ایشوز ٹو ایشوز اپوزیشن جماعتیں ایک مؤقف اپنا سکتی ہیں۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں آصف زرداری نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان قابل احترام ہیں مگر ہمیں سیاسی فیصلہ کرنا ہے، پیپلز پارٹی اپنی اصولی سیاست پر سمجھوتہ نہیں کر سکتی۔

واضح رہےکہ گرینڈ اپوزیشن الائنس نے صدارتی انتخاب کے لیے مشترکہ امیدوار لانے کا اعلان کیا تھا لیکن پیپلزپارٹی کی جانب سے اعتزاز احسن کو امیدوار نامزد کیا گیا جس پر مسلم لیگ (ن) نے شدید اعتراض کیا اور امیدوار کی تبدیلی کا مطالبہ کیا لیکن آصف زرداری نے امیدوار کی تبدیلی سے انکار کردیا۔

متفقہ صدارتی امیدوار پر راضی کرنے کیلئے فضل الرحمان کی آصف زرداری سے ملاقات

پیپلزپارٹی کی طرف سے اعتزاز احسن کے نام پر ڈٹے رہنے کے بعد مسلم لیگ (ن) اور دیگر اپوزیشن جماعتوں نے مولانا فضل الرحمان کو امیدوار نامزد کردیا ہے۔

ملک میں آئندہ صدر کے انتخاب کے لیے الیکشن 4 ستمبر کو ہوں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں