22

پیرول پر رہائی کے بعد نواز شریف، مریم اور کیپٹن (ر) صفدر جاتی امرا پہنچ گئے

اسلام آباد: بیگم کلثوم نواز کی وفات کے بعد سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پے رول پر رہائی کے نتیجے میں جاتی امرا پہنچ گئے۔

تینوں افراد اڈیالہ جیل سے رہائی کے بعد نور خان ایئر بیس سے خصوصی پرواز کے ذریعے رات ڈھائی بجے لاہور پہنچے۔

واضح رہے کہ کلثوم نواز کے خاوند اور سابق وزیراعظم نواز شریف، ان کی بیٹی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) محمد صفدر ایون فیلڈ ریفرنس میں احتساب عدالت سے سزا یافتہ ہیں اور 13 جولائی سے اڈیالہ جیل میں قید ہیں۔

نواز شریف کی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی تدفین میں شرکت کے لیے پنجاب حکومت نے تینوں کو ابتدائی طور پر 12 گھنٹے کے لیے رہا کیا ہے، تاہم پنجاب کابینہ کی جانب سے رہائی کے دورانیے میں اضافے کا امکان ہے۔

شریف خاندان کی جانب سے رسمِ قل تک 5 دن کے لیے تینوں کی پیرول پر رہائی کی درخواست کی گئی ہے۔

گزشتہ روز بیگم کلثوم نواز کے انتقال کے بعد شہباز شریف سمیت خاندان کے دیگر افراد اڈیالہ جیل پہنچے تھے اور 4 گھنٹے تک نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر سے ملاقات کی تھی۔

شہباز شریف پھر نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی رہائی کے بعد ان کے ساتھ ہی خصوصی پرواز میں لاہور پہنچے۔

نور خان ایئر بیس پر گفتگو میں مریم نواز نے کہا کہ وہ بہت تکلیف میں ہیں کہ آخری وقت میں والدہ کے ساتھ نہیں تھیں۔

اپنی والدہ کا ذکر کرتے ہوئے مریم نواز آب دیدہ ہو گئیں اور کہا کہ والدہ کے انتقال کی خبر کے بعد دن انتہائی تکلیف دہ تھا۔ ساتھ ہی انہوں نے قوم سے اپیل کہ ان کی والدہ کے درجات کی بلندی کے لیے دعا کرے۔

اپنے رہنماؤں کے استقبال کے لیے مسلم لیگ (ن) کے کئی رہنما بھی لاہور ایئرپورٹ پہنچے۔

اس موقع پر جیو نیوز سے گفتگو میں لیگی رہنما اور سابق صوبائی وزیر رانا ثناء اللہ نے کہا کہ پیرول پر رہائی نواز شریف کا بنیادی اور قانونی حق ہے۔ ضروری تھا کہ نواز شریف اور مریم نواز آخری ایام میں کلثوم نواز کے ساتھ ہوتے۔ یہ ایسا دکھ ہے جو ساری زندگی مٹ نہیں سکے گا۔

لیگی رہنما سائرہ افضل تارڑ نے کہا کہ نواز شریف کے حوصلے بلند ہیں۔

واضح رہے کہ شہباز شریف، بیگم کلثوم نواز کی میت لینے کے لیے آج صبح لاہور سے لندن روانہ ہوں گے۔

لندن میں بیگم کلثوم نواز کی نماز جنازہ آج بعد نماز ظہر ادا کی جائے گی۔ ان کی میت لندن کے ریجنٹ پارک کے قریب واقع مسجد کے سرد خانے منتقل کر دی گئی ہے۔

نواز شریف کی اہلیہ کلثوم نواز کینسر کے مرض سے لڑتے لڑتے 68 برس کی عمر میں کل انتقال کر گئیں تھیں، ان کی تدفین جمعے کو جاتی امرا میں ہوگی۔

لندن میں پاکستان ہائی کمیشن نے بھی کلثوم نواز کی میت پاکستان بھجوانے میں تعاون کی پیش کش کی تھی تاہم شریف خاندان نے یہ پیشکش شکریے کے ساتھ رد کرتے ہوئے کہا تھا کہ میت پاکستان بھجوانے اور جنازے کے تمام انتظامات وہ خود کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں