18

قومی اسمبلی میں اپوزیشن کا احتجاج، گو نیازی گو کے نعرے

قومی اسمبلی میں وزیر مملکت ریونیو حماد اظہر کی جانب سے وفاقی بجٹ پیش کیا گیا جہاں اپوزیشن اراکین نے شدید احتجاج کیا اور وزیراعظم عمران خان کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

اپوزیشن اراکین اپنی نشستوں سے اٹھ کر اسپیکر ڈائس کے سامنے جمع ہوگئے، انہوں نے مختلف پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے اپوزیشن اراکین گو نیازی گو اور گو عمران گو کے نعرے لگاتے رہے جبکہ اس دوران حماد اظہر نے اپنی بجٹ تقریر جاری رکھی۔

خیال رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے اپنا پہلا مالی سال 20-2019 کا بجٹ پیش کیا ہے۔

حماد اظہر نے وفاقی بجت پیش کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی کابینہ کے ارکان نے اپنی تنخواہوں میں 10 فیصد کمی کا فیصلہ کیا ہے اور بجٹ میں سول اور عسکری بجٹ میں کمی کا فیصلہ کیا گیا جس کے تحت سول بجٹ کو 460 ارب روپے سے کم کر کے 437 ارب روپے کیا جا رہا ہے اور دفاعی بجٹ 1150 ارب روپے ہی رہے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کا مجموعی قرض اور ادائیگیاں 31 ہزار ارب روپے تھی اور 97 ارب ڈالر بیرونی قرضہ جات اور ادائیگیاں تھی اور بہت سے تجارتی قرضے زیادہ سود پر لیے گئے، گزشتہ 5 سال میں برآمدات میں کوئی اضافہ نہیں تھا، جبکہ حکومت کا مالیاتی خسارہ 2 ہزار 260 ارب روپے تک پہنچ گیا تھا۔

حماد اظہر نے کہا کہ قومی ترقیاتی منصوبوں کے لیے 1800 ارب اور وفاقی ترقیاتی منصوبوں کے لیے 950 ارب روپےمختص کیے گئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں