23

بلاف خوف و خطر کہتا ہوں کشمیر کا سودا کیا گیا ہے: شہبازشریف

بلاف خوف و خطر کہتا ہوں کشمیر کا سودا کیا گیا ہے: شہبازشریف

اسلام آباد: قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہا ہےکہ وہ بلاف خوف و خطر کہتے ہیں کہ کشمیر کا سودا کیا گیا ہے۔

قومی اسمبلی میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے شہبازشریف نےکہا کہ ایک باپ کے سامنے بیٹی کو گرفتار کیا گیا اور بیٹی کے سامنے والد کو، ایسا دلخراش منظر شاید پہلے کبھی نہ دیکھا گیا ہو، وہ دونوں باپ بیٹی خود کو قانون کے حوالے کرنے آئے تھے، بیٹی اپنی بیمار ماں کو اور والد اپنی بیمار بیوی کو لندن کے اسپتال چھوڑ کر آئے تھے، کل اس کی بدترین تاریخ دہرائی گئی۔

انہوں نے کہا کہ میں اپنے بھائی اور ملک کے تین بار منتخب وزیراعظم کو ملنے گیا، مجھے جیل کے باہر کھڑا کردیا گیا اور آدھا گھنٹہ اندر نہیں جانے دیا گیا۔

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ پوری قوم جانتی ہے کہ نوازشریف پہلی بار گرفتار نہیں ہوئے اور مریم بھی پہلی بار گرفتار نہیں ہوئیں، یوسف عباس بھی پہلی بار گرفتار نہیں ہوا، انہیں مشرف کے زمانے میں بھی گرفتار کیا گیا، میری عمر گذر گئی ایسے حادثوں کا سامنا کرتے ہوئے، سر میں چاندی آگئی، ہم نے پہلے بھی یہ ظلم و ستم برداشت کیا، عمران نیازی کا ظلم بھی برداشت کریں گے اور سر نہیں جھکائیں گے۔

انہوں نے نیب کی کارروائیوں پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں کاروبار بند، روٹی مہنگی، دوائیں ناپید، تعلیم کے دروازے بند ہیں، احتساب کی کارروائیاں معاشی صورتحال سے ہٹانے کے لیے ہے۔

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ عمران نیازی کی بڑی بھول ہے کہ ہمیں ان چیرہ دستیوں سے دبا لیں گے، یہ گردن کٹ جائے گی کبھی ان کے آگے جھکے گی نہیں، ہم نیب اور پی ٹی آئی کو دیوار سے لگادیں گے۔

مسلم لیگ (ن) کے صدر نے مزید کہا کہ ابھی چند دن پہلے مودی سرکار نے کشمیر میں بدترین اقدام کیا ہے، بلا خوف و خطر کہتا ہوں کہ کشمیر کا سودا کیا گیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی طرف اٹھنے والے تمام ہاتھ، چاہے وہ مودی ہو یا کوئی اور ہو، قوم ان ہاتھوں کو توڑ ڈالے گی، ہم کشمیر سے لے کر معاشی ترقی تک اور جوہری پروگرام کا اپنے خون سے دفاع کریں گے، ہمیں ہر معاملے میں دیوار سے لگایا اور مزید لگالیں لیکن آخر میں چیخیں ان کی نکلیں گی، ہم اپنے مشن پر قائم رہیں گے، ملک کی ترقی اور خوشحالی کے لیے جان کی بازی لگاکر عظیم بنائیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں