57

اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کے مستقبل کے فیصلے کیلئے ووٹنگ

اسرائیلی وزیراعظم نیتن یاہو کی قسمت کے فیصلے کے لیے اسرائیل میں انتخابات جاری ہیں جہاں نیتن یاہو نے انہیں بہت ہی سخت مقابلہ قرار دے دیا۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق اگر ان انتخابات میں کامیابی حاصل ہوجاتی ہے تو بینجمن نیتن یاہو اسرائیل کے طویل المدت وزیراعظم بن جائیں گے۔

نیتن یاہو اپنی اہلیہ کے ہمراہ ووٹ ڈالنے کے لیے پولنگ اسٹیشن پہنچے، جہاں انہوں نے میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے اسرائیلی عوام سے درخواست کی کہ وہ بڑی تعداد میں نکلیں اور ووٹ ڈالیں۔

خیال رہے کہ رواں برس ہی کرپشن چارجز سامنے آنے کے بعد اسرائیلی وزیر کو ان کے عہدے سے ہٹادیا گیا تھا تاہم قبل از وقت انتخابات میں ان کی جماعت نے ایک مرتبہ پھر کامیابی حاصل کی تھی اور وہ آئندہ 6 ماہ کے لیے دوبارہ وزیر اعظم منتخب ہوئے تھے۔

یہ بھی یاد رہے کہ اسرائیل میں انتخابات رواں برس نومبر میں شیڈول تھے تاہم کرپشن چارجز سامنے آنے کے بعد یہ انتخابات اپریل میں ہی منعقد کرلیے گئے تھے۔

اسرائیل میں عام انتخابات 5 نومبر 2019 کو منعقد ہونا تھے تاہم اسرائیلی وزیراعظم پر بدعنوانی کے الزامات اور راسخ العقیدہ یہودیوں سے متعلق قومی خدمات کے بل پر حکومتی اراکین میں اختلافات کے باعث الیکشن قبل از وقت کرانے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

نیتن یاہو نے ووٹ ڈالنے کے بعد گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ ان انتخابات میں مقابلہ بہت سخت ہوگا‘۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں