49

اب مقبوضہ کشمیر میں خون خرابہ ہوگا، عمران خان نے آخرکاردھمکی دے دی

اسلام آباد(روزنامہ میٹرو واچ) اب کشمیر میں خون خرابہ ہوگا، وزیراعظم نے امریکی صدر کو دو ٹوک الفاظ میں پیغام دے دیا، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ عمران خان نے ڈونلڈ ٹرمپ کو بتایا کہ کشمیر میں جب ردعمل آیا تو معاملات کسی کے قابو میں نہیں آئیں گے، بھارت کا یہ دعویٰ کہ کشمیر میں سب کچھ ٹھیک ہے، سوائے جھوٹ کے اور کچھ نہیں۔تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے مقبوضہ کشمیر سے متعلق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو دو ٹوک الفاظ میں پیغام دیا ہے۔ وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے ڈونلڈ ٹرمپ کو خبردار کیا ہے کہ کشمیر میں خون خرابہ ہوگا۔ مقبوضہ کشمیر میں ظالمانہ کرفیو نافذ ہے۔

بھارت کا یہ کہنا ہے کہ کشمیر میں سب کچھ ٹھیک ہے سراسر جھوٹ ہے۔ بھارت کشمیر کی صورتحال سے متعلق امریکا کو گمراہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ وزیراعظم نے امریکی صدر کو واضح الفاظ میں کہا ہے کہ جب کشمیر میں ظالمانہ کرفیو پر ردعمل دیا گیا تو پھر خون خرابہ ہوگا۔ وزیراعظم عمران خان نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کہا ہے کہ دنیا کے سب سے طاقتور ملک کے صدر ہونے کی حیثیت سے یہ ان کی ذمے داری ہے کہ وہ کشمیر تنازعے کے حل کیلئے کردار ادا کریں۔امریکی صدر کو بھارتی وزیراعظم نریندر مودی پر دباو ڈال کر کشمیر میں نافذ ظالمانہ کرفیو ختم کروانا چاہیئے۔ وزیراعظم کے مطالبے پر امریکی صدر ڈونلڈر ٹرمپ نے حامی بھری ہے کہ وہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کو کشمیر میں نافذ کرفیو ختم کرنے کا کہیں گے۔ امریکی صدر نے دوبارہ سے ثالثی کی پیش کش بھی کی ہے اور یہ بھی کہا ہے کہ پاکستان کو امریکہ سے ثالثی کا کردار ادا کروانے کیلئے تیار ہے، تاہم بھارت راضی نہیں ہے۔ جبکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مودی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے یہ بھی کہا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نے ہیوسٹن جلسے میں جارحانہ باتیں کی تھیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں