137

اگر آپ کے بچے اس سکول،کالج یا یونیورسٹی میں پڑھتے ہیں توان کا مستقبل بچانے کیلئے یہ خبر ضرور پڑھ لیں

پنجاب میں کئی نجی تعلیمی کالجز اور یونیورسٹیاں غیر قانون قرار، پبنجاب حکومت نے موقف اپنایا ہے کہ ایسی یونیورسٹیوں اور کالجز میں داخلہ نہ لیا جائے،حکومت کی جانب سے ان پر سخت ایکشن لیا جائیگا۔ ایچ ای سی کا کہنا ہے کہ نیشل کالج آف بزنس ایڈمینسٹریشن اینڈ اکنامکس کے بہاولپور،گجرات، سیالکوٹ اور رحیم یارخان میں قائم سب کیمپسز بھی سی زد میں آتے ہیں۔
سپیریئر کالج کے سرگودھا، فیصل آباد، خان پور اور بہاولپور میں قائم سب کیمپسز کو بھی غیر قانونی قرار دے دیا گیا ہے۔ یونیورسٹی آف لاہور کے گجرات، اسلام آباد اور پاکپتن میں موجود کیمپسز بھی غیر قانونی ہیں۔ قرشی یونیورسٹی کے لاہور میں کینال روڈ اور فیروز پور والے کمیپسز بھی ہائیر ایجوکیشن کمیشن نے غیر قانونی قرار دے دیے ہیں۔
ہجویری یونیورسٹی کا شیخوپورہ اور یونیورسٹی آف منیجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی کا سیالکوٹ میں سب کیمپس بھی غیر قانونی ہے ۔
پنجاب گروپ آف کالجز کے پروجیکٹ یونیورسٹی آف سینٹرل پنجاب کے راولپنڈی، گوجرانوالہ، گجرات، فیصل آباد، ملتان، سیالکوٹ، سرگودھا اور بہاولپور سب کیمپسس بھی غیر قانونی قرار پائے ہیں۔ اب حکومت کی جانب سے یہ کہا جا رہا ہے کہ ان کیمپسس میں داخلہ نہ لیا جائے تا کہ طالبہ اور طالبات کو پریشانی نہ ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply