48

عدالت نے کور کمانڈر حملہ کیس کا فیصلہ سنا دیا

کراچی(ویب ڈیسک) سندھ ہائی کورٹ نے کور کمانڈر حملہ کیس میں فیصلہ سناتے ہوئے نو ملزمان کی سزائے موت برقرار رکھی جبکہ دو کو بری کر دیا۔ عدالت نے ملزمان یعقوب سعید خان اور نجیب اللہ کو بری کر دیا جبکہ عطا الرحمان، شہزاد باجوہ، دانش امام اور خرم سیف اللہ کی سزائیں برقرار رکھیں۔

ان کے علاوہ عزیز احمد، شہزاد مختار، راؤ خالد، شعیب صدیقی اور محمد خالد کی سزائیں بھی برقرار رکھیں۔ ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 2006 میں سزا سنائی تھی، انہوں نے کور کمانڈر کراچی احسن سلیم حیات پر حملہ کیا تھا۔ حملے میں چھ جوان شہید ہوئے تھے۔ عدالت نے کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے 9دہشت گردوں کی سزا کے خلاف اپیلیں مسترد کر دیں اور سزائے موت کو برقرار رکھا ۔ عدالت نے 2 دہشت گردوں کو بری کر دیا جن میں یعقوب سعید خان اور نجیب اللہ شامل ہیں، جنہیں عدم ثبوت کی بناء پر بری کیا گیا۔ کالعدم تنظیم جند اللہ کے سرغنہ عطاء الرحمان،شہزاد باجوہ، دانش امام ،خریم سیف ،عزیز احمد ، شہزاد مختار ،راؤ خالد ،شعیب احمد اور محمد خالد کی سزائیں برقرار رکھی گئی ہیں۔ انسداد دہشت گردی

کی عدالت نے 11 ملزمان کو سزائے موت سنائی تھی ،دہشت گردوں نے 2004 میں کور کمانڈر کراچی پر حملہ کیا تھا، حملے میں 6جوان شہید ہوئے تھے جبکہ کور کمانڈر کراچی محفوظ رہے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply