0

بریکنگ نیوز،عدالت کا ایک اور معروف اینکر پرسن کو گرفتار کرنے کاحکم

اینکر پرسن مبشر لقمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کردیے گئے۔ضمانت قبل از گرفتاری کے لیے مبشر لقمان کے ضامن ریحان اشفاق کے بھی وارنٹ جاری کیے گئے ہیں۔ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج اسلام آباد سکندر خان نے دونوں کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے۔

مبشر لقمان ضمانت قبل از گرفتاری پر ہیں اور مسلسل 3 سماعتوں سے عدالت میں پیش نہں ہوئے جس پر ان کے وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے۔ خیال رہے کہ دانیال عزیز کے والد انور عزیز نے مبشر لقمان کے خلاف فوجداری شکایت داخل کرا رکھی ہے۔ مبشر لقمان نے انور عزیز اور ان کے خاندان کے بارے میں غیرشائستہ کلمات ادا کیے تھے۔ عدالت نے پولیس کو وارنٹ گرفتاری کی تعمیل کا حکم دیتے ہوئے سماعت 22 جنوری تک ملتوی کردی۔ وارنٹ گرفتاری کی عدم تعمیل پر متعلقہ تھانے کے ایس ایچ او کو قانونی

کارروائی کا سامنا کرنا پڑے گا۔ خیال رہے کہ گزشتہ دنوں محسن لغاری کے بیٹے کی دعوت ولیمہ میں وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے ٹی وی اینکر مبشر لقمان کو تھپڑ رسید کیا تھا تاہم وہاں موجود جہانگیر ترین اور دیگر رہنمائوں نے دونوں میں بیچ بچائو کرایا تھا۔ اس حوالے سے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ نجی ٹی وی کے اینکر مبشر لقمان نے ساتھی صحافی کے ساتھ مل کر یوٹیوب پرپروگرام کیا، یہ پروگرام یوٹیوب چینل پر اپنی ریٹنگ بڑھانے کے لیے کیا گیا۔قومی اسمبلی میں اظہار

خیال کرتے ہوئے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ دو دن قبل اپنے یوٹیوب چینل پر پروگرام کیا اور کہا کہ میری، ایک وزیر صاحبہ اور لڑکیوں کی پورن ویڈیوز ہیں۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اس اینکر سے پوچھا کہ ویڈیوز کہاں ہیں تو انہوں نے مسکراتے ہوئے جواب دیا کہ میرے پاس نہیں ہیں کسی نے کہا ہے۔ فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ یو ٹیوب چینل پر میرے خلاف پروگرام کیا گیا، جس کی مرضی وہ سیاستدان کی عزت اچھال دیتا ہے لہٰذا اس معاملے کا نوٹس لیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں