0

بنگلہ دیش ٹیم کا دورہ، سکیورٹی کیلئے پاک فوج، رینجرز طلب

صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت کی زیر صدارت سول سیکرٹریٹ میں کابینہ کمیٹی برائے لا اینڈ آرڈر کا اجلاس منعقدہوا ۔ اجلاس میں آئی جی پنجاب شعیب دستگیر، ایڈیشنل چیف سیکرٹری داخلہ مومن آغا ،کمشنر لاہور ڈویعن سیف انجم،پاکستان کرکٹ بورڈ کے نمائندوں اورمتعلقہ اداروں نے شرکت کی ۔اجلاس میں بنگلہ دیش کرکٹ ٹیم کے دورہ لاہور و راولپنڈی کے سکیورٹی پلان اور ممکنہ مسائل کا جائزہ لیا گیا ۔
اجلاس میں قانون نافذ کرنے والے اداروں کی مجوزہ سکیورٹی اور ٹریفک پلان پربریفنگ بھی دی گئی ۔کمشنر اورسٹی پولیس آفیسر راولپنڈی نے ویڈیو لنک کے ذریعے بریفنگ دی ۔ بریفنگ میںبتایا گیا کہ قذافی اسٹیڈیم لاہور اور کرکٹ سٹیڈیم راولپنڈی کے گردونواح ، مہمان ٹیم کی رہائش اور روٹ کے ارد گرد سخت سکیورٹی انتظامات کئے جائیںگے ،لاہور میں پولیس کی10 ہزار سے زائد،سریع الحرکت فورس کے 19 اہلکار، آرمی کمانڈوزاور رینجرزتعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ راولپنڈی میں پولیس کے چار ہزار سے زائد اہلکاروں کے ساتھ آرمی کی ایک بٹالین اور رینجرز کی ایک ونگ تعینات ہو گی۔
بریفنگ میںبتایاگیا کہ سی سی ٹی وی کیمروں کے ساتھ ساتھ سٹیڈیم کے داخلی اور خارجی راستوں پرسخت چیکنگ ہو گی۔ راجہ بشارت نے کہا کہ مہمان ٹیم کو فول پروف سکیورٹی فراہم کرنے کے لیے تمام انتظامات بروقت مکمل کر لیے جائیں ،حفاظتی پلان میں عام شہریوں کے لیے ٹریفک کے مسائل کم سے کم ہونے چاہئیں ،ماضی کی نسبت سکیورٹی پر آنے والے اخراجات میں کمی کی جائے،وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی ہدایات کے مطابق عوام کو کرکٹ میچوں سے محظوظ ہونے کے لیے تمام سہولتیں فراہم کی جائیں ،راولپنڈی پولیس اسلام آباد پولیس کے ساتھ مل کر سکیورٹی پلان میں موجود خامیاں دور کر ے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں