108

پاکستان کا غلامی سے آزاد ہونے کا وقت آگیا

لاہور ۔۔۔ ترک صدر نے گزشتہ روز پاکستان کا دورہ کیا تھا جس میں انہوں نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے بھی خطاب کیا اور پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کے ساتھ مختلف معاہدوں پربھی دستخط کئے تھے .

اسی پر بات کرتے ہوئے تجزیہ نگار عمران یعقوب خان کا کہنا تھا کہ ترکی کا سی پیک میں دلچسپی دکھانا پاکستان کے لئے بہتر ثابت ہوسکتا ہے .

مزید بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اگر ترکی ہمارے ساتھ سی پیک میں شامل ہو جاتا ہے تو ہم غلامی سے باہر آجائیں گے. سی پیک پاکستان کے لئے گیم چینجر ہے، ترکی کی اس میں شمولیت باقی تمام معاہدوں سے بڑ ی ہے.اس لئے اگر چین اور ترکی سی پیک میں ہمارے ساتھ بھرپور طریقے سے شامل ہو گئے تو ہمیں کسی اور کی ضرورت نہیں ہو گی ،

ہم غلامی سے آزاد ہو جائیں گے.ترک صدر نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات میں کہا ہے کہ پاکستان ترکی سے سیاحت کے معاملے میں مدد لیں اور عمران خان کی جانب سے بھی اس پر مثبت انداز میں جواب دیا گیا ہے کیونکہ وہ بھی چاہتے ہیں کہ پاکستان میں سیاحتی مقامات میں اضافہ ہو اور زیادہ سے زیاد ہ لوگ یہاں آئیں .یاد رہے کہ ترک صدر رجب طیب اردگان نے گزشتہ روز پاکستان کا ایک کامیا ب دورہ کیا تھا جس کے بعد اب وہ واپس ترکی پہنچ چکے ہیں.

اس دورے میں دونوں ممالک کی قیادت نے تفصیلی ملاقاتیں کیں اور آپس میں تعلقات کو مزید بہتر بنانے کے لئے مختلف معاہدوں پر دستخط بھی کئے. اسی بارے میں بات کرتے ہوئے تجزیہ نگار عمران یعقوب خان کا کہنا تھا کہ ترکی کا سی پیک میں دلچسپی لینا ایک خوش آئند بات ہے، اگر ترکی بھی چین کی طرح ہمارے ساتھ سی پیک میں شامل ہو گیا تو ہم غلامی سے آزاد ہو جائیں گے کیونکہ سی پیک پاکستان کے لئے گیم چینجر ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply