7

لاہور: 7 سالہ بچی کا قتل کے بعد ریپ، کزن گرفتار

لاہور: ایک نو عمر لڑکے نے پولیس حراست میں اعتراف کیا ہے کہ اس نے محلاں ول علاقے کے ایک گاؤں میں اپنی 7 سالہ کزن کو قتل کرنے کے بعد اس کی لاش کا ریپ کیا۔

پولیس کے مطابق بچی محلاں ول کے ایک گاؤں کے رہائشی مزدور کی بیٹی تھی جسے اس کا کزن لالچ دے کر ایک سنسان جگہ لے گیا اور وہاں یہ گھناؤنا فعل کیا۔

ذرائع کے مطابق بچی کے گھر والوں نے جب لڑکی کو گھر سے غائب دیکھا تو پولیس میں شکایت کی۔

لاہور پولیس کے تفتیشی ونگ کے ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) شارق جمال نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ جب معاملہ پولیس تک پہنچا تو متاثرہ بچی کی والد کے شبہے پر ان کے بھتیجے رضوان یوسف اور اس کے دوست اللہ دتا کو حراست میں لیا گیا جو اس ہولناک جرم کا گواہ تھا۔

ڈی آئی جی نے کہا کہ پہلے بچی کے والدین کو لگا کہ وہ قرآن پڑھنے مدرسے گئی ہے تاہم جب کچھ گھنٹوں تک وہ واپس نہ آئی تو انہوں نے پولیس سے رجوع کیا۔

بعدازاں پولیس نے اس معاملے کے لیے ایک ٹیم تشکیل دی جس نے گھر سے چند گز کے فاصلے پر ایک تالاب سے بچی کی لاش برآمد کرلی۔

ڈی آئی جی نے بتایا کہ تفتیش کے دوران ملزم نے اپنے جرم کا اعتراف کرلیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں