7

بھارت میں نئے مضمون ’گائے سائنس‘ کا بھی امتحان لیا جائے گا

نئی دہلی: مودی سرکار نے انتہا پسند ہندو ووٹرز کی حمایت حاصل کرنے کے لیے ’’گائے سائنس‘‘ کے نام سے نئے مضموں کا امتحانی پرچہ آن لائن لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مودی سرکار کی جانب سے تشکیل کردہ تنظیم ’’راشٹریہ کامدھنو ای‘‘ کو ہندو مت میں مقدس سمجھی جانے والی گائے سے متعلق عوام کی معلومات کا جائزہ لینے کے لیے ’’گائے سائنس‘‘ کا امتحان لینے کی اجازت دیدی ہے۔

حکومت کی جانب سے ملک بھر میں 25 فروری کو “گائے سائنس” کے امتحان کا آن لائن انعقاد کیا جائے گا۔ ایک گھنٹے کے اس پیپر میں بچوں، بڑوں اور غیر ملکیوں کے لیے بھی ہندی ، انگریزی اور 12 علاقائی زبانوں میں 100 سوالات پوچھے جائیں گے۔

راشٹریہ کامدھنو ای کے سربراہ ولبھ بھائی کتھیریا نے میڈیا کو بتایا کہ کامیاب امیدواروں کو انعامات اور اسناد بھی تقسیم کی جائیں گی۔ امتحانی مواد میں یہ بات بھی شامل کی گئی ہے کہ گائے کو زبح کرنے سے زلزلے آتے ہیں۔

ولبھ بھائی کتھیریا نے مزید کہا کہ لوگ جانوروں کی حقیقی معاشی اور سائنسی قدر سے واقف نہیں ہیں، اس امتحان کا مقصد عوام میں اس کی اہمیت کو اجاگر کرنا ہے۔

واضح رہے کہ مودی سرکار نے بھارت کی کئی ریاستوں میں گائے کے زبح پر پابندی عائد کر رکھی ہے اور خلاف ورزی پر 7 سال قید اور 10 لاکھ روپے جرمانے کی سزا دی جاسکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں