5

کراچی: ایم کیو ایم پاکستان کی محفل میلاد میں دھماکا، 6 افراد زخمی

کراچی کے علاقے گلستان جوہر میں پرفیوم چوک پر متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے تحت میلاد النبی کی تقریب میں دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں 6 افراد زخمی ہوگئے۔

زرائع کے مطابق دھماکے سے خاتون نعت خواں سمیت 6 افراد زخمی ہوئے ہیں جنہیں جوہر چورنگی کے قریب نجی اسپتال میں منتقل کیا گیا ہے ان میں ثمینہ، بابر، شہریار، حسن، فیضان اور احمد شامل ہیں ۔

ترجمان ایم کیو ایم کے مطابق بابر ایم کیو ایم کے رہنما خالد مقبول صدیقی کے کوآرڈی نیٹر ہیں جب کہ شہریار کا تعلق ایم کیو ایم کے شعبہ اطلاعات سے ہے تاہم دونوں انتہائی نگہداشت وارڈ میں زیر علاج ہیں۔

دھماکے کے بعد پولیس، رینجرز اور حساس اداروں کی ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں اور شواہد اکٹھے کیے۔

بم ڈسپوزل اسکواڈ کے ذرائع کے مطابق دھماکا کریکر کا تھا، تقریب کے دوران کریکر سے حملہ کیا گیا ہے دیسی ساختہ کریکر میں 300 گرام بارودی مواد استعمال کیا گیا ہے، کریکر پلاسٹک کین میں تیار کیا گیا تھا جس کے پھٹنے سے فٹ پاتھ کا تقریباً ڈیڑھ فٹ حصہ ٹوٹ گیا۔

ایس ایس پی ایسٹ غلام اظفر مہیسر کا کہنا تھا تقریب کے لیے پولیس سے اجازت لی گئی تھی نہ ہی کسی تھانے یا پولیس کو اطلاع دی تھی تاہم دھماکا نعت خوانی کے دوران ہوا ۔

دھماکے کے بعد ایم کیو ایم کے سینیئر رہنما فیصل سبزواری نے ٹوئٹر پیغام میں بتایا کہ ایم کیو ایم پاکستان کے تحت محفل میلاد کا انعقاد کیا گیا تھا، دھماکا فٹ پاتھ کے قریب ہوا، خالد مقبول صدیقی بھی محفل میلادمیں موجود تھے، دھماکے میں ایم کیو ایم کےشعبہ اطلاعات کا کارکن بھی زخمی ہوا ہے، دھماکا فٹ پاتھ کے قریب ہوا۔

وزیر اعلی سندھ مراد علی شاہ نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے اعلیٰ حکام سے رپورٹ طلب کرلی ہے ساتھ ہی انہوں نے زخمیوں کو علاج کی بہترین سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں