10

کیپ ٹاؤن ٹیسٹ: پاکستان 177 رنز پر ڈھیر، جنوبی افریقا کا اچھا آغاز

نیو لینڈز: کیپ ٹاؤن ٹیسٹ کی پہلی اننگز میں پاکستان کے 177 پر آل آؤٹ ہونے کے بعد جنوبی افریقا نے اپنی پہلی اننگز میں 123 رنز بنا لیے ہیں۔

جنوبی افریقا کی جانب سے اننگز کا آغاز مرکرم اور ڈین ایلگر نے کیا اور دونوں کھلاڑیوں نے ٹیم کو 56 رنز کا آغاز فراہم کیا، 20 کے انفرادی اسکور پر ایلگر محمد عامر کی گیند پر وکٹوں کے پیچھے سرفراز کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

جنوبی افریقا کے دوسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی مرکرم تھے جو پہلے روز کے کھیل کی آخری گیند پر بولڈ ہوئے۔

مرکرم کو 78 رنز پر پارٹ ٹائم بولر شان مسعود نے بولڈ کیا۔

پہلے روز کا کھیل ختم ہوا تو ہاشم آملہ 24 رنز کے ساتھ وکٹ پر موجود تھے اور جنوبی افریقا کو پاکستان کی پہلی اننگز کی برتری ختم کرنے کے لیے مزید 54 رنز درکار ہیں جب کہ اس کی 8 وکٹیں ابھی باقی ہیں۔

قبل ازیں جنوبی افریقی کپتان فاف ڈوپلیسی نے ٹاس جیت کر پہلے سرفراز الیون کو بیٹنگ کی دعوت دی تو ایک مرتبہ پھر قومی ٹیم کا ٹاپ آرڈر ناکام ثابت ہوا اور وقفے وقفے سے وکٹیں گرتی چلی گئیں۔

اوپننگ بلے بازوں نے ایک مرتبہ پھر مایوس کن آغاز کیا اور صرف 9 کے مجموعی اسکور پر فخر زمان اور پھر 13 کے مجموعے پر امام الحق پویلین لوٹ گئے۔

فخر زمان ایک رنز بنا کر ڈیل اسٹین اور امام الحق 8 رنز بنا کر فلینڈر کا شکار بنے۔

تیسرے آؤٹ ہونے والے تجربہ کار بیٹسمین اظہر علی تھے جو اولیویئر کی باؤنسی گیند پر سلپ پر کھڑے ہاشم آملہ کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

جنوبی افریقا کی باؤنسی پچ پر تیز رفتار پروٹیز بولروں کے سامنے اسد شفیق کی مزاحمت بھی زیادہ دیر نہ چل سی اور 51 کے مجموعی اسکور پر وہ 20 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئے جب کہ بابراعظم بھی 2 رنز کے مہمان ثابت ہوئے۔

54 کے مجموعی اسکور پر آدھی ٹیم کے آؤٹ ہونے کے بعد شان مسعود اور کپتان سرفراز احمد نے پروٹیز بولرز کے خلاف تھوڑی سی مزاحمت دکھائی لیکن شان مسعود بھی 44 رنز کے مہمان ثابت ہوئے، انہیں ربادا نے وکٹوں کے پیچھے کیچ آؤٹ کرایا۔

وکٹ پر سیٹ ہونے کے بعد کپتان سرفراز احمد ایک بار پھر اولیوئیر کی باؤنسی بال پر غیر ضروری شارٹ کھیلتے ہوئے کیچ آؤٹ ہو گئے اور پھر پوری ٹیم 52 ویں اوور میں 177 کے مجموعے پر پویلین لوٹ گئی۔

محمد عامر 22 رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے جب کہ جنوبی افریقا کی جانب سے اولیوئیر نے 4 اور ڈیل اسٹین نے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ کگیسو ربادا کے حصے میں دو اور فلینڈر نے ایک پاکستانی بلے باز کو آؤٹ کیا۔

میزبان ٹیم کے خلاف تین ٹیسٹ میچز کی سیریز کے دوسرے میچ کے لیے قومی بیٹنگ لائن میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی تاہم فاسٹ بولر حسن علی کی جگہ محمد عباس کو ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

کپتان سرفراز احمد کا ٹاس ہارنے کے بعد کہنا تھا کہ اگر وہ ٹاس جیتنے میں کامیاب ہوتے تو پہلے بیٹنگ ہی کرتے۔

پاکستان نے آج تک جنوبی افریقا کی سرزمین پر کوئی سیریز نہیں جیتی اور کیپ ٹاؤن میں پاکستان کا ریکارڈ بھی کچھ اچھا نہیں، اس گراؤنڈ پر دونوں ٹیموں کے درمیان تین ٹیسٹ سیریز ہوئیں اور تینوں میں جنوبی افریقا نے پاکستان کو شکست دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں