125

’’آپ کا کھانا نہیں کھا سکتے لیکن ۔ ۔۔ ‘‘حکومت ق لیگ کو منانے کی کوشش، چوہدری شجاعت نے گزشتہ رات وزیراعظم کو کیا پیغام بھجوایا؟ تہلکہ خیز انکشاف

حکومت کی اتحادی جماعت مسلم لیگ (ق) نے بھی آج وزیراعظم عمران خان کی جانب سے دیے گئے عشائیے میں شرکت نہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے اور حکومت کی جانب سے انہیں منانے کی کوشش کامیاب نہیں ہوسکی ہے،سربراہ مسلم لیگ ق نے وزیراعظم کو پیغام میں کہا کہ بجٹ میں ووٹ دینے کا وعدہ تھا، ووٹ دیں گے لیکن آپ کا کھانا نہیں کھائیں گے . جیونیوز کے مطابق اس حوالے سے ترجمان مسلم لیگ ق کا کہنا تھا کہ حکومت کے اتحادی ہیں مگر عشائیہ میں شریک نہیں ہو رہے کیونکہ پارٹی رہنما مصروف ہیں لیکن بجٹ کی منظوری کے تمام عمل میں حکومت کو ووٹ دے رہے ہیں .

دوسری جانب ق لیگ نے اتحادی جماعتوں کی اپنی الگ بیٹھک جمالی ہے اور چوہدری برادران کی جانب سے اتحادی جماعتوں کے رہنماؤں کو عشائیے پر مدعو کیا گیا ہے.ذرائع کے مطابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے اس سلسلے میں چوہدری شجاعت حسین سے رابطہ کرکے ا نہیں منانے کی کوشش کی تاہم وہ کامیاب نہ ہوسکے.ذرائع کا کہنا ہے کہ اسد قیصر نے چوہدری شجاعت سے درخواست کی کہ ایک رکن قومی اسمبلی ہی بھجوادیں تاکہ ق لیگ کی نمائندگی ہو جائے تاہم چوہدری شجاعت نے ق لیگ کے

کسی ایک رکن قومی اسمبلی کوبھی عشائیہ میں بھجوانےسے انکار کردیا.سربراہ مسلم لیگ ق نے وزیراعظم کو پیغام میں کہا کہ بجٹ میں ووٹ دینے کا وعدہ تھا، ووٹ دیں گے لیکن آپ کا کھانا نہیں کھائیں گے.دوسری جانب حکومت اوراس کی اتحادی جماعت (ق) لیگ آمنے سامنے آگئے، وفاقی دارالحکومت میں سیاسی گرما گرمی رہی، حکومت اور اتحادی جماعت کی طرف سے ایک ہی رات 2 عشایے دیے گئے.ایک طرف وزیراعظم عمران خان نے اپنی پارٹی اور اتحادی جماعتوں کے ارکان کو عشائیہ دیا ہے تو وہیں مسلم لیگ (ق) نے بھی اتحادی جماعتوں سمیت آزاد ارکان اسمبلی کو عشائیہ دیا.وفاقی وزیر ہاؤسنگ طارق بشیر چیمہ کی طرف منسٹر انکلیو میں اپنی رہائش گاہ پر دیے گئے عشائیہ میں (ق) لیگ کے چوہدری مونس الٰہی، چوہدری سالک حسین، چوہدری حسین الٰہی، آزاد رکن قومی اسمبلی اسلم بھوتانی، بلوچستان عوامی پارٹی کی وفاقی وزیر زبیدہ جلال، خالد مگسی،احسان اللہ ریکی، اسرار ترین، روبینہ عرفان جب کہ جی ڈی اے سے وفاقی وزیر ڈاکٹر فہمیدہ مرزا شریک ہوئیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں