5

مقبوضہ کشمیر حملے پر ریمارکس، نوجوت سنگھ سدھو ‘کپل شرما شو’ کا حصہ نہیں رہے؟

ئی دہلی: معروف ٹیلی وژن شو کے پروڈیوسرز نے بھارت کے سابق کرکٹر اور پنجاب کے وزیر نوجوت سنگھ سدھو کے بھارت کے زیر انتظام کشمیر میں فوجیوں پر ہونے والے حملے پر ’پاکستان کی حمایت میں ریمارکس‘ پر انہیں شو سے نکالنے کا فیصلہ کرلیا۔

نوجوت سنگھ سدھو کو اپنے ریمارکس پر سماجی رابطوں کی مختلف ویب سائٹس پر تنقید کا سامنا ہے اور کئی افراد نے ان کو کامیڈی شو سے نکالنے کا مطالبہ کیا تھا۔

مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں ہونے والے خودکش حملے پر سدھو نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’کیا چند افراد کی وجہ سے آپ پوری قوم کو ذمہ دار ٹھہرا سکتے ہو یا صرف ایک شخص کو ذمہ دار ٹھہراؤ گے، حملہ بزدلانہ تھا اور میں اس کی بھرپور مذمت کرتا ہوں’۔

انہوں نے کہا کہ ’تشدد ہمیشہ مذمت کرنے کے لائق ہوتا ہے اور جنہوں نے یہ کیا انہیں سزا ہونی چاہیے’۔

ان کے اس بیان کو کئی افراد نے پسند نہیں کیا اور انہوں نے ٹوئٹر پر ان کو شو سے نکالنے کا مطالبہ کیا تھا۔

چند افراد نے سخت رد عمل دیتے ہوئے ٹوئٹ کیا کہ ’ہمیں مل کر سدھو کی برطرفی تک کپل شرما کے شو کا بائیکاٹ کرنا چاہیے‘۔

کسی کا کہنا تھا کہ ’کپل شرما سدھو کو اپنے شو سے ہٹاؤ یا ہم تمہارے شو کا بائیکاٹ کریں گے‘۔

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ میں شو کے لیے کام کرنے والے ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ چینل میں اس معاملے پر بحث ہوئی تھی جس کے بعد انہوں نے سدھو کو شو سے ہٹانے کا فیصلہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ کپل شرما کی جگہ اس شو پر معروف اداکارہ ارچنا پورن سنگھ کو لایا جائے گیا۔

انہوں نے مزید بتایا کہ اداکارہ نے پہلے ہی شو کی 2 قسطوں کے لیے شوٹ کیا تھا اور چینل نے ان ہی کو نوجوت سنگھ کی جگہ شو میں لانے کا فیصلہ کیا ہے۔

خیال رہے کہ جمعرات (14 فروری) کے روز مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں دھماکے کے نتیجے میں 44 بھارتی فوجی ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے، جس کے بعد بھارتی حکومت اور ذرائع ابلاغ نے بغیر کسی ثبوت کے پاکستان پر الزامات لگانے کا سلسلہ شروع کردیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں